کرائے کی اسناد اور ڈرگ سیلز لائسنس پر فارمیسیاں اور میڈیکل سٹور ز کھولنے کا دھندا عروج پکڑنے لگا

0

جہلم: شہر سمیت ضلع بھر میں کرائے کی اسناد اور کرائے کے ڈرگ سیلز لائسنس پر فارمیسیاں اور میڈیکل سٹور ز کھولنے کا دھندا عروج پکڑنے لگا۔محکمہ صحت کے ذمہ داران خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ضلع بھر میں محکمہ صحت کے ایس او پیز کو پس پشت ڈالتے ہوئے ناتجربہ کار نوجوانوں نے کرائے کی اسناد اور کرائے کے ڈرگ سیلز لائسنس پر فارمیسیاں اور میڈیکل سٹور ز کھولنے کا کارروبار شروع کررکھا ہے ، حکومت پنجاب کی جانب سے عائد کی جانے والی پالیسیوں کے مطابق میڈیکل سٹور یا فارمیسی کھولنے کیلئے کوالیفائیڈ پرسن کا ہونا اور ہر مالک کے لئے اپنا ڈرگ سیلز لائسنس ہونا ضروری ہے ۔

اس کے برعکس شہر میں معروف اور غیر معروف میڈیکل سٹورز اور فارمیسیوں پر کوالیفائیڈ پرسن موجو د ہی نہیں زیادہ تر میڈیکل سٹورز اور فارمیسیاں کوالیفائیڈ لوگوں کے بغیر چلائی جارہی ہیں اس غیر قانونی دھندے میں پرائیویٹ کمیشن ایجنٹ بنیادی کردار ادا کر رہے ہیں۔

عوامی حلقوں نے پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن سمیت دیگر متعلقہ ذمہ داران سے مطالبہ کیا ہے کہ غیر قانونی ، میڈیکل سٹورزاور فارمیسی مالکان کیخلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے اور ایسے تمام میڈیکل سٹورز اور فارمیسیز سیل کی جائیں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اپنی رائے دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.